100

اَمانت کی ادائیگی کے اَحکام کا بیان

اَمانت کی ادائیگی کے اَحکام کا بیان
میٹھے میٹھے اسلامی بھائیو!ہمارے مذہب اِسلام کی تعلیمات میں یہ بات واضح طور پر دیکھی جاسکتی ہے کہ کسی بھی مسلمان کو بلاوجہ شرعی تکلیف نہ پہنچائی جائے ، چاہے اِس تکلیف کا تعلق جسم سے ہو یا رُوح سے ، مال سے ہو یا جان سے ، الغرض جس بھی جہت سے تکلیف پہنچنا ممکن ہو ، شریعت نے اُسے حرام قرار دیا ہے ، کسی کی امانت کی ادائیگی میں کوتاہی کرنا ، اُسے ادا نہ کرنا یا اُس میں خیانت کرنا یہ بھی ایک ایسا جرم ہےجس سے بہت زیادہ ذہنی اذیت ہوتی ہے۔ اِس لیے اِسلام میں امانت کی ادائیگی پر بہت زور دیا گیا ہے۔ ریاض الصالحین کا یہ باب اَمانت ادا كرنے کے اَحکام کے بارے میں ہے۔ عَلَّامَه نَوَوِی عَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللّٰہِ الْقَوِی نے اِس باب میں 2آیات اور 4احادیثِ مبارکہ بیان فرمائی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں